علمائے کرام نے اسموگ کو آسمانی آفت قرار دے دیا

17

لاہور: پنجاب بھر میں اسموگ کے باعث مختلف ٹریفک حادثات اور بیماریوں کے پھیلنے کے بعد علمائے کرام نے اسموگ کو آسمانی آفت قرار دے دیا۔

ایکسپریس نیوزکے مطابق علمائے کرام نے اسموگ کو آسمانی آفت قرار دیتے ہوئے عوام کو توبہ استغفار اور نماز استسقا ادا کرنے کا مشورہ دے دیا ہے۔ علمائے کرام کا کہنا ہے کہ اسموگ ایک آسمانی آفت ہے اور اس سے بچنے کا واحد حل اپنے رب کے حضور توبہ ہے جس کے لئے سارے مسلمانوں کو مصلے پر آنا پڑے گا۔

اس خبرکوبھی پڑھیں: پنجاب بھر میں اسموگ کا آج پھر راج

علما کرام کا کہنا ہے کہ اگرچہ آئندہ کئی روزتک بارش کا کوئی امکان نہیں لیکن نماز استسقا اور توبہ سے بڑی بڑی مصیبتیں ٹل جاتی ہیں اور اس عمل کی بدولت اللہ کی رحمت سے بارش بھی ہوسکتی ہے اورقوم کو درپیش مسائل سے بھی چھٹکارا مل سکتا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ جس ملک میں اسلامی نظام کا مذاق اڑایا جائے وہاں اس طرح کی آفات کا وارد ہونا کوئی بڑی بات نہیں، قوم کواپنے اعمال درست کرکے سچی توبہ کرنی چاہئے۔

اس خبرکوبھی پڑھیں: محکمہ ماحولیات نے اسموگ کا ذمہ دار بھارت کو قراردے دیا

واضح رہے کہ لاہور سمیت پنجاب بھر میں چھائی اسموگ سے شہری شدید متاثر ہو رہے ہیں، ایک طرف اسپتالوں میں آنکھوں اور سانس کے مریضوں کی تعداد بڑھتی جا رہی ہے تو دوسری طرف حد نگاہ کم ہونے سے حادثات بھی بڑھ گئے ہیں۔

The post علمائے کرام نے اسموگ کو آسمانی آفت قرار دے دیا appeared first on ایکسپریس اردو.

مزید خبریں

اپنی رائے دیجئے

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.