”اگر آپ کے پیشاب کی مقدار کم ہوگئی ہے تو یہ انتہائی خطرناک بات ہے کیونکہ ۔۔۔“

61

سائنسدانوں نے ایسی وجہ بتادی کہ سن کر آپ کے پاﺅں تلے زمین نکل جائے گی
نیویارک(نیوزڈیسک) جن لوگوں کو شوگر یا بلڈ پریشر کا عارضہ لاحق ہوتا ہے انہیں بخوبی معلوم ہے کہ جہاں یہ بیماری جسم کے دیگر اعضاءکے لئے خطرناک ہوتی ہے وہیں یہ گردوں کو بھی ناکارہ بنادیتی ہیں۔گردوں کی خرابی کا علم ابتدائی طور پر معلوم نہیں ہوپاتی اور جب میڈیکل رپورٹس میں ان کے ناکارہ ہونے کا علم ہوتا ہے تو تب تک کافی دیر ہوچکی ہوتی ہے۔ آئیے آپ کو کچھ ایسے طریقے بتاتے ہیں جن کے بارے میں جان کر آپ اپنے گردوں کی کارکردگی کے بارے میں جان سکتے ہیں۔
پیشاب میں بے قاعدگی
جن افراد کے گردے خراب ہورہے ہوتے ہیں ان کے پیشاب میں بے قاعدگی آجاتی ہے۔ کبھی بہت زیادہ پیشاب آنے لگتا ہے اور کبھی پیشاب کی مقدار کم ہوجاتی ہے۔ چونکہ گردے جسم میں چھلنیوں کی طرح کام کرتے ہیں اور خون میں موجود فاسد مادے فلٹر کرکے انہیں پیشاب کے راستے نکالتے ہیں لیکن ان کی خرابی کی وجہ سے پیشاب کی مقدار کم ہوجاتی ہے۔
جسمانی سوجن
جب پیشاب کی مقدار کم ہوجاتی ہے تو مائع جسم سے باہر نکلنے کی بجائے جسم میں ہی رہنے لگتا ہے جس کی وجہ سے مختلف اعضاءسوجن کا شکار ہوجاتے ہیں۔ اکثر یہ سوجن پاﺅں، ہاتھوں اور چہرے پر نمایاں ہوتی ہے۔
سانس لینے میں دشواری
جب فاسد اور زہریلے مادے خون میں ہی رہ جاتے ہیں تو اس کی وجہ سے کئی پیچیدگیاں پیدا ہوتی ہیں اور سانس لینے میں دشواری ان میں سے ایک ہے۔ اگر آپ کو بلاوجہ اپنا سانس پھولتا ہوا محسوس ہوتو فوری طور پر ڈاکٹر سے رابطہ کریں۔
تھکاوٹ
خون میں فاسد مادے کی وجہ سے انسان بغیر کسی وجہ اور کام کے بغیر ہی تھکاوٹ کا شکار ہوجاتا ہے۔ ہر وقت نیند کا آنا یا کوئی بھی کام کرنے سے دل کا اچاٹ ہونا ان علامات میں سے ایک ہے۔

مزید خبریں

اپنی رائے دیجئے

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.