شامی علاقے غوطہ میں جنگ بندی کے باوجود بمباری، 4 شہری ہلاک

46

دمشق: شام کے مشرقی علاقے غوطہ میں جنگ بندی کے اعلان کے باوجود بمباری کے نتیجے میں 4 شہری ہلاک ہوگئے۔

شام میں امدادی سرگرمیوں میں حصہ لینے والی تنظیم وائٹ ہیلمٹ کے ترجمان کے مطابق شامی لڑاکا طیاروں نے ڈوما اور ہراسٹا میں بمباری کی جس کے نتیجے میں خاتون سمیت 4 شہری ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے۔

شامی لڑاکا طیاروں کی جانب سے اس وقت بمباری کی گئی جب روس نے جنگ بندی کا اعلان کیا تھا تاہم روسی اعلان کے آدھے گھنٹے بعد ہی باغیوں کے زیرقبضہ علاقے میں بمباری ہوئی جب کہ دنیا بھر سے شہریوں پر بمباری کی شدید مذمت کی جارہی ہے۔

اقوام متحدہ کے جنرل سیکرٹری انتونیو گوتیرس نے خانہ جنگی کے شکار شام  کے علاقے غوطہ کو ‘زمین پر جہنم’ قرار دیتے ہوئے وہاں انسانیت سوز کارروائیوں کی شدید مذمت کی ہے۔

شام میں کام کرنے والی انسانی حقوق کی تنظیم کے مطابق گزشتہ 8 روز کے دوران بمباری اور زمینی کارروائی کے نتیجے میں 550 سے زائد شہری مارے جاچکے ہیں۔

یاد رہے کہ 25 فروری کو سلامتی کونسل نے شام میں جنگ بندی کی کویت اور سویڈن کی جانب سے پیش کی جانے والی قرارداد متفقہ طور پر منظور کی تھی جس کے مطابق جنگ بندی کے دوران متاثرین میں امداد کی ترسیل اور طبی بنیادوں پر انخلا کی اجازت دی گئی تھی۔

مزید خبریں

اپنی رائے دیجئے

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.