حسن نواز جے آئی ٹی کے سامنے پیش

39

وزیر اعظم کے چھوٹےصاحبزادے حسن نواز جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوگئے۔ پاناما کیس پر مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے حسن نواز کو آج پیش ہونے کےلیے سمن جاری کررکھا تھا۔

حسن نواز کو دوروز قبل جے آئی ٹی میں پیش ہونا تھا، لیکن طبیعت ناساز ہونے کے باعث وہ پیش نہیں ہو سکے تھے۔

حسن نواز اپنے ساتھ دستاویزات بھی لائیں ہیں جو ان کے ساتھ آنے والے شخص نے اٹھا رکھی تھیں۔

حسن نواز کا پرسنل سیکورٹی اسٹاف بھی ان کے ساتھ تھا تاہم اسے اکیڈمی کے باہر ہی روک لیا گیا۔

حسن نواز اب آج جے آئی ٹی کے سامنے آج اپنا بیان قلم بند کرائیں گے، جے آئی ٹی میں پیشی کےلیے حسن نواز برطانیہ سے پاکستان آئے ہیں۔

فیڈرل جودیشل اکیڈمی کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ن لیگ کے رہنما دانیال عزیز کا کہنا تھا کہ 2014 سے تمام حکومتی اداروں کی تضحیک کا عمل جاری ہے ،پولیس اہلکاروں کو’اوئے‘آئی جی اور’اوئے‘ایس پی تک کہا گیا،یہ بھی کہا گیا ’اوئے‘ایس پی تمہیں نہیں چھوڑوں گا۔

انہوں نے کہا کہ حکومتی اداروں کی تذلیل اوروں نے کی،ہم نے پہلے دن سے عدالتوں کے سامنے سر جھکایا۔

اس موقع پر آصف کرمانی نے کہا کہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم نے قطری شہزادے سے رابطہ کیا ہے ،ٹیم جسے بلائے گی وہ حاضر ہو جائے گا،معاملہ جے آئی ٹی اور قطری شہزادے کے درمیان ہے ، قطری شہزادے کو کچھ آپشنز دیئے گئے ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ جے آئی ٹی نے وزیر اعظم کے بڑے صاحبزادےحسین نواز کو بھی ہفتے کو پیش ہونے کا سمن جاری کر دیا ہے۔ حسین نواز ہفتے کے روز چوتھی مرتبہ جے آئی ٹی میں پیش ہوں گے۔

حسین نواز گذشتہ روز تیسری بار جے آئی ٹی کے سامنے پیش ہوئے،ذرائع کے مطابق حسین نواز نے اثاثوں کی دستاویزات سمیت تمام شواہد جمع کرا دئیے ہیں۔ انہوں نے اپنے کاروبار کی تفصیل اور ٹیکس ریٹرنز بھی جے آئی ٹی کو جمع کرا دیئے ہیں۔

مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کا اجلاس فیڈرل جوڈیشل اکیڈمی میں ہورہا ہے،جہاں سیکورٹی کےسخت انتظامات کرتے ہوئے پولیس نفری تعینات کردی گئی ہے۔

مزید خبریں

اپنی رائے دیجئے

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.