نوازشریف کی ریفرنسز یکجا کرنے کی درخواست اسلام آباد ہائیکورٹ سے بھی مسترد

14

 اسلام آباد: احتساب عدالت کے بعد اب ہائی کورٹ نے بھی نوازشریف کے خلاف دائر نیب ریفرنسز کو یکجا کرنے کی درخواست مسترد کردی ہے۔

وفاقی دارالحکومت کی احتساب عدالت کے بعد اب اسلام آباد ہائی کورٹ نے بھی نوازشریف کی نیب ریفرنسز کو یکجا کرنے کی درخواست مسترد کردی ہے۔ سابق وزیراعظم نوازشریف نے عدالت سے ایون فیلڈ، عزیزیہ اور فلیگ شپ ریفرنسز کو یکجا کرنے کی استدعا کی تھی جس پر اسلام آباد ہائی کورٹ نے نواز شریف کی تینوں درخواستوں کی کازلسٹ جاری کیا تھا جب کہ جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر نے درخواست پر فیصلہ محفوظ کرکے سماعت ملتوی کردی تھی۔

اسلام آباد ہائی کورٹ نے 3 درخواستوں پر محفوظ فیصلہ سناتے ہوئے ریفرنس یکجا کرنے کی نوازشریف کی درخواست مسترد کردی ہے۔ فیصلہ جسٹس عامر فاروق اور جسٹس محسن اختر کیانی نے سنایا۔

واضح رہے کہ نوازشریف نے پاناما کیس میں نیب کی جانب سے دائر ریفرنسز کے خلاف سپریم کورٹ میں بھی درخواست دائر کررکھی ہے جس کا فیصلہ آنا باقی ہے۔ سابق وزیراعظم کی جانب سے دائر  درخواست میں مؤقف پیش کیا گیا ہے کہ سپریم کورٹ کا  28 جولائی کا فیصلہ حقائق اور قانون سے مطابقت نہیں رکھتا، فیصلے کے باعث ایک الزام پر 3 ریفرنسز کا سامنا کرنا پڑرہا ہے، ریفرنسز دائر کرنے کا حکم سپریم کورٹ کے اپنے فیصلے کی خلاف ورزی ہے، عدالت عظمیٰ اپنے فیصلوں میں کہہ چکی ہے کہ ایک الزام پر زیادہ مقدمات نہیں بنائے جاسکتے۔

مزید خبریں

اپنی رائے دیجئے

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.