بلوچستان اسمبلی میں عدم اعتماد تحریک کی تاریخ

43
کوئٹہ(صباح نیوز)بلوچستان اسمبلی میں عدم اعتماد تحریک کی تاریخ اب تک 3بار وزیراعلیٰ بلوچستان کےخلاف عدم اعتماد کی تحریکیں جمع کرائی جاچکی ہیں۔تفصیلات کے مطابق 1970ءمیں بلوچستان ون یونٹ کے خاتمے کے بعد بحیثیت صوبہ وجود میں آیا اور 1972ءمیں پہلی صوبائی اسمبلی تشکیل دی گئی اور اس وقت سے لے کر آج تک تین بار وزرائے اعلی کے خلاف تحریک عدم اعتماد جمع ہوچکی ہے۔ان وزرائے اعلیٰ میں میر تاج محمد جمالی مرحوم، سردار اختر جان مینگل اور موجودہ وزیراعلی بلوچستان نواب ثنا اللہ خان زہری شامل ہیں۔میر تاج محمد جمالی (مرحوم )1990ءسے 1993ءتک یعنی تین سال تک وزیراعلیٰ کے عہدے پرفائز رہے جبکہ سرداراخترجان مینگل بلوچستان کے 9ویں وزیراعلیٰ کے طور پر22فروری 1997ءسے 15جون 1998ءیعنی ایک سال 3ماہ اور 24دن وزیراعلیٰ کے عہدے پر فائز رہے اور نواب ثناءاللہ زہری نے بلوچستان کے 15ویں وزیراعلیٰ کی حیثیت سے 24دسمبر 2015ءکو حلف لیا تھا 9جنوری 2018ءکو مستعفیٰ ہوگئے نواب ثناءاللہ زہری 2سال 16دن وزیراعلیٰ بلوچستان کے عہدے پر فائز رہے ۔واضح رہے کہ میر تاج محمدجمالی اور سردار اختر جان مینگل کے خلاف تحریک عدم اعتماد اسمبلی میں جمع ہوئی تو وہ فوری طور پر وزارت اعلی مستعفی ہوگئے تاہم مسلم لیگ (ن)کے صوبائی صدر وزیراعلیٰ بلوچستان نواب ثنا ءاللہ خان زہری بلوچستان اسمبلی میں عدم اعتماد تحریک پیش کرنے تک تحریک کا سامنا کرتے رہے۔

مزید خبریں

اپنی رائے دیجئے

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.