ننھی اسماء کا قاتل اسکا کزن نکلا، ملزم نے اعتراف جرم کر لیا

27
پشاور:  ننھی اسماء کا قاتل اسکا اپنا ہی کزن نکلا، ملزم نے اعتراف جرم کر لیا۔ پولیس نے ملزم محمد نبی اور اسکے ساتھی کو گرفتار کر لیا۔


آر پی او مردان کی میڈیا بریفنگ


آر پی او مردان ڈاکٹر محمد سعید نے میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے بتایا کہ لڑکے نے اسما کو زیادتی کا نشانہ بنانے کی کوشش کی، بچی نے چیخیں ماریں تو ملزم نے گلا دبانے کی کوشش کی، ملزم نے اسماء کے منہ پر ہاتھ رکھ کر قتل کیا۔ انہوں نے کہا ملزم محمد نبی مقتولہ بچی کا کزن ہے جس کی عمر 15 سال ہے جو ریسٹورنٹ میں کام کرتا ہے، ملزم کا گھر مقتولہ کے گھر کے سامنے ہے، ملزم نے اعتراف جرم کر لیا۔ آر پی او مردان کا کہنا تھا ملزم نے بچی کے قتل سے متعلق تفصیلات اپنے ساتھی ملازم کو بھی بتائیں جس کو شامل تفتیش کر لیا ہے۔


آئی جی کے پی کے کی میڈیا سے گفتگو


آئی جی خیبر پختونخوا نے بتایا کہ ایک خون کے قطرے سے اسماء کیس ٹریس ہوا، ایک ڈی این اے میچ ہو گیا۔ انہوں نے کہا کیس جنسی تشدد کا تھا، اس میں ریپ نہیں ہوا، ملزم نے بچی کو زیادتی کا نشانہ بنانے کی کوشش کی اور پھر اس کی جان لے لی۔ ان کا کہنا تھا خیبرپختونخوا پولیس نے مردان کا کیس 25 روز میں حل کر لیا، اسما کا واقعہ 25 روز قبل مردان میں ہوا، اسما کا واقعہ افسوسناک تھا، جب گھروں میں اپنی بیٹیوں کو دیکھتے ہیں تو ہمیں بھی تکلیف ہوتی ہے۔ انہوں نے کہا ماضی میں اس قسم کے واقعات پر ہمارا رزلٹ گھنٹوں کے حساب سے نکلتا ہے، ہری پور میں واقعہ ہوا اس کا رزلٹ 3 روز بعد نکلا تھا۔ آئی جی کے پی کے نے مزید بتایا کہ حساس مقدمات میں پولیس تیز کام کرنے کی کوشش کرتی ہے، ترقی یافتہ ممالک میں بھی کچھ مقدمات میں کئی ماہ یا سال لگ جاتے ہیں۔


عمران خان کا کے پی کے پولیس کو خراج تحسین


چیئرمین پاکستان تحریک انصاف نے کے پی پولیس کو خراج تحسین پیش کرتے ہوئے کہا کے پی پولیس فور س نے قابل تحسین کام کیا۔ انہوں نے کہا نہ کوئی ثبوت، نہ سی سی ٹی وی فوٹیج، صرف خون کا ایک قطرہ ملا تھا، پولیس نے مجرموں کو پکڑنے کیلئے پیشہ ورانہ مہارت دکھائی۔


اسماء کے چچا کا پولیس پر اعتماد


اسماء کے چچا ظاہر شاہ نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا پولیس کی تفتیش سے مطمئن ہوں، پولیس پر مکمل اعتماد ہے۔

خیال رہے مردان کے نواحی علاقے گوجر گڑھی سے چار سالہ بچی اسما گھر کے سامنے کھیلتے ہوئے لاپتہ ہوگئی تھی تاہم بعد میں اس کی لاش ان کے گھر کے قریب واقع گنے کے کھتیوں سے ملی تھی۔ اسماء کا والد بہرام محنت مزدوری کی عرض سے 6 ماہ سے بیرون ملک مقیم ہے۔ واقعے کے بعد مردان پولیس متععدد مشتبہ افراد کو حراست میں لیا۔ اس حوالے سے ایک جے آئی ٹی بھی تشکیل دی گئی۔ پولیس نے ملزمان کی گرفتاری میں مدد دینے والوں کے لئے 5 لاکھ روپے انعام کا بھی اعلان کیا تھا۔

مزید خبریں

اپنی رائے دیجئے

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.