ایم کیو ایم کی فلم میں پھر ڈرامائی موڑ، فاروق ستار کا آج بہادر آباد جانے کا اعلان

29

کراچی:  ایم کیو ایم پاکستان کے سربراہ ڈاکٹر فاروق ستار اور رابطہ کمیٹی کے درمیان معاملات چوتھے روز بھی حل نہیں ہو سکے۔ رابطہ کمیٹی فاروق ستار کو جمعرات کو بھی بہادر آباد لانے میں ناکام رہی، تاہم ڈاکٹر فاروق ستار نے اعلان کیا ہے کہ وہ آج بہادر آباد مرکز میں رابطہ کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کریں گے۔


فاروق ستار کی پریس کانفرنس


ڈاکٹر فاروق ستار نے اپنی رہائش گاہ کے باہر اپنی اہلیہ افشاں اور کشور زہرا کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے ایم کیو ایم کے سرابرہ ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ ایم کیو ایم میں کوئی گروپ بندی یا اختلاف نہیں ہے، میں نے رابطہ کمیٹی سے ملنے سے انکار نہیں کیا۔ کشور زہرا سے کچھ اہم امور پر بات کر رہا تھا اس لیے تاخیر ہوگئی۔ آج بہادر آباد میں رابطہ کمیٹی کا اجلاس ہو گا اور ثالثی کمیٹی کے طریقے کے مطابق آگے بڑھیں گے اور تمام معاملات کو طے کر لیں گے۔ واضح کر دینا چاہتا ہوں کہ ایم کیو ایم ایک ہے اور ایک ہی رہے گی۔ ایم کیو ایم نے سینیٹ کیلئے 16 فارم مشاورت سے جمع کرائے ہیں۔

فاروق ستار نے کہا کہ میں نے آج بہادر آباد جانا تھا لیکن مسلسل چار راتوں سے جاگ رہے ہیں، تھک کر 8 بجے سو گیا تھا، 10 بجے اطلاع ملی کہ رابطہ کمیٹی آئی ہے اور کشور زہرا میرے ساتھ آگئی، ان کے ساتھ گفتگو میں تاخیر ہوگئی اور رابطہ کمیٹی چلی گئی، میں نے کشور زہرا کو بھیجا لیکن رابطہ کمیٹی جا چکی تھی۔ انہوں نے کہا کہ مجھے جمعہ کو جانا تھا میں نے اس کے بارے میں خواجہ اظہار الحسن کو آگاہ کر دیا تھا لیکن رابطہ کمیٹی کے لوگ آ گئے ، میں ناراض نہیں ہوں اور نہ ہی میں نے کسی سے ملنے سے انکار کیا ہے، کسی کے دل میں یہ بات نہیں آنی چاہیے کہ میں ناراض ہوں۔ انہوں نے کہا کہ میں واضح کر دینا چاہتا ہوں کہ بہادر آباد کا آفس ہی میری پہلی و آخری پناہ گاہ اور ایم کیو ایم پاکستان کا عارضی دفتر ہے، اب ہم کوئی مذاکرات نہیں کریں گے، اب ہمارا اجلاس ہو گا اور تمام معاملات کو مشاورت سے حل کر لیا جائے گا۔


کشور زہرا کی میڈیا سے گفتگو


اس موقع پر کشور زہرا نے کہا کہ میں رابطہ کمیٹی کے ساتھ آئی تھی اور فاروق ستار کا گھر ہمارا گھر ہے اور یہاں آنا جا نا لگا رہتا ہے۔ ایم کیو ایم میں کوئی گروپ بندی اور اختلاف نہیں ہے۔ ایک سوال کے جواب میں فاروق ستار نے کہا کہ میں جمعہ کی شام کو بہادر آباد جاؤں گا۔


رابطہ کمیٹی کی فاروق ستار کے گھر آمد


عامر خان کی قیادت میں رابطہ کمیٹی کے تمام اراکین فاروق ستار کے گھر پہنچے اور ان سے ملاقات کے لیے ایک گھنٹے تک بیٹھے رہے اور انتظار کرتے رہے ، تاہم ڈاکٹر فاروق ستار سے ملاقات نہیں ہوسکی ، جس کے بعد رابطہ کمیٹی واپس بہادر آباد روانہ ہوگئی ۔ اس موقع پرعامر خان نے کہا کہ فاروق ستار سے ملاقات نہیں ہو سکی ہے، اُمید ہے کہ وہ بہادر آباد آئیں گے، اگر دوبارہ آنا پڑا تو دوبارہ آئیں گے۔ امین الحق نے کہا کہ ہم 9 بج کر 55 منٹ پر فاروق ستار کے گھر گئے، کچھ لوگوں کو چائے اور لسی پلائی گئی، تاہم فاروق ستار سے ملاقات نہیں ہو سکی۔ فیصل سبزوار ی نے کہا کہ فاروق ستار نے بہادر آباد مرکز آنا تھا، تاہم وہ بہادر آباد مرکز نہیں آسکے ، ہم نے آج دن بھر فاروق ستار کا انتظار کیا ،اس وقت ہمیں فوری نوعیت کے فیصلے درکار ہیں اور بات چیت سے ہی معاملات کو حل کریں گے۔


رابطہ کمیٹی کا اجلاس


دوسری جانب ایم کیو ایم پاکستان کی رابطہ کمیٹی کا اجلاس جمعرات کو بہادر آباد عارضی مرکز پر منعقد ہوا، جس میں ایم کیو ایم میں پیدا ہونے والی صورت حال کا جائزہ لیا گیا اور اس پر غور کیا گیا کہ ڈاکٹر فاروق ستار نے بہادر آباد مرکز آنے کاوعدہ کیا تھا لیکن وہ نہیں آئے اور ان کا انتظار کیا جاتا رہا۔ بعد میں فیصلہ کیا گیا کہ رابطہ کمیٹی کے تمام ارکان ڈاکٹر فاروق ستار کی رہائش گاہ جائیں گے اور ان سے درخواست کریں گے کہ وہ بہادر آبادآکر رابطہ کمیٹی کے اجلاس کی صدارت کریں ، جس کے بعد تمام رابطہ کمیٹی کے ارکان پی آئی بی کالونی میں ڈاکٹر فاروق ستار کی رہائش گاہ گئے جہاں مذاکرات کا پانچواں دور ہونا تھا۔

اس موقع پرکنور نوید جمیل نے کہا کہ فاروق ستار نے کہا تھا کہ کامران ٹیسوری کو سینیٹ الیکشن سے دستبردار کریں گے اور تمام لوگوں کے نام دوبارہ زیر غور آئیں گے۔ فاروق ستار بھائی کی جانب سے کامران ٹیسوری کو اس شرط پر و ڈرا کرایا جائے گا کہ اگر باقی لوگوں کو بھی و ڈرا کیا جائے ،ہم نے ان کا یہ مطالبہ مان لیا تھا۔

مزید خبریں

اپنی رائے دیجئے

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.