سوشل میڈیا مذہبی عقائد کیلئے خطرہ قرار

22

شکاگو : معروف سرچ انجن گوگل کے سابق عہدے دار کا کہنا ہے کہ فیس بک اور دیگر سماجی رابطوں کی سائٹس سے لوگ اپنے مذہبی عقائد سے دور اور اپنے مذہب سے بدزن ہوتے جا رہے ہیں، ایسی ایجاد اور ٹیکنالوجیز انسانیت کیلئے خطرہ ہیں۔

غیر ملکی خبر رساں ایجنسی بلومبرگ کے مطابق معروف کمپنی اور سرچ انجن گوگل کے سابق عہدیدار نے فیس بک سمیت سماجی رابطوں کی ویب سائٹس کو انسانی بقا اور عقائد کیلئے خطرہ قرار دے دیا ہے۔

اپنے انٹرویو میں گوگل پراڈکٹ منیجر کے عہدے پر کام کرنے والے ٹریسٹن ہیرس نے دعویٰ کیا ہے کہ فیس بک جیسی ٹیکنالوجی کمپنیاں روزانہ 2؍ ارب افراد کی سوچ کو مختلف سمت میں لے کر جا رہی ہیں، وگوں پر ان کے مذہب کی بجائے یہ کمپنیاں زیادہ اثر اندازہ ہو رہی ہیں۔

انہوں نے کہا کہ اندازاً دو ارب افراد دنیا میں سمارٹ فون استعمال کرتے ہیں جبکہ اتنے ہی افراد فیس بک استعمال کرتے ہیں، اندازہ لگائیں کہ یہ تعداد مسیحی کمیونٹی کے افراد کی تعداد سے بھی زیادہ ہے۔

انہوں نے کہا کہ ایک شخص دن میں اوسطاً 150؍ مرتبہ اپنا فون دیکھتا ہے، یہ کمپنیاں آپ کی سوچ کو کہیں اور لیجانے کی صلاحیت رکھتی ہیں اور میری رائے میں یہ ایک عادت ہے اور لوگوں کو اس کی لت پڑ چکی ہے۔

مزید خبریں

اپنی رائے دیجئے

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.