سائبر کرائم سے محفوظ ترین فون بنانے کا دعویٰ

8

سوئٹزرلینڈ کی ملٹی نیشنل ٹیکنالوجی کمپنی ‘سرن لیب’ نے دنیا کا طاقتور ترین اور ہرطرح کے سائبر کرائم سے محفوظ موبائل فون بنانے کا دعویٰ کیا ہے۔

اس کمپنی کا یہ دوسرا فون ہے، اس سے قبل اسی کمپنی نے ‘سولارن’ نامی ایک ایسا مضبوط اور طاقتور فون متعارف کرایا تھا، جس متعلق کمپنی کا دعویٰ تھا کہ اس سے انسان کی پرائیویسی متاثر نہیں ہوتی۔

کمپنی کا پہلا فون 2016 میں 1600 امریکی ڈالر کی قیمت پر فروخت کے لیے پیش کیا گیا تھا، یعنی کمپنی کا پہلا فون ہی پاکستانی ایک لاکھ 60 ہزار روپے سے زائد کی قیمت پر فروخت کے لیے پیش کیا گیا۔

اب کمپنی نے پہلے موبائل سے بھی زیادہ محفوظ اور طاقتور فون ‘دی فنے‘متعارف کراتے ہوئے اسے پری آرڈر آن لائن فروخت کے لیے پیش کردیا۔

کمپنی کا دعویٰ ہے کہ اس فون کو ‘بلاک چین’ نامی ایسی خصوصی ٹیکنالوجی کے ذریعے تیار کیا گیا ہے، جس سے کسی بھی کریپٹو کرنسی کی لین دین یا آن لائن رقم کی ترسیل سے کوئی بھی فراڈ نہیں ہوسکے گا۔

کمپنی کا دعویٰ ہے کہ اس فون میں سائبر سیکیورٹی کے ایسے فیچرز شامل کیے گئے ہیں، جو اس سے قبل کسی بھی کمپیوٹر ٹیکنالوجی کمپنی کی جانب سے استعمال نہیں کیے گئے۔

کمپنی نے اس فون کو دنیا کا محفوظ ترین فون قرار دیتے ہوئے دعویٰ کیا ہے کہ اگر اس فون کے ذریعے کوئی بھی شخص فراڈ کرنے کی کوشش کرے گا تو اس کا بلاک چین سسٹم یہی فون استعمال کرنے والے دوسرے شخص کو پہلے ہی خبردار کردے گا۔

مزید خبریں

اپنی رائے دیجئے

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا.