Mashriq Newspaper

ضلعی انتظامیہ چمن کی طرف سے افغان مہاجرین کیلئے ایمرجنسی میڈیکل کیمپ قائم

چمن (آئی این پی ) ضلعی انتظامیہ چمن کی طرف سے بائی پاس ہولڈنگ کیمپ میں افغان مہاجرین کیلئے ایمرجنسی میڈیکل کیمپ قائم کردیا اس موقع پر افغانستان جانے والے تمام افغان مہاجرین کو طبی خدمات کے ساتھ ساتھ انکو تمام تر سہولیات بہم پہنچانے کے لیے ڈی سی چمن نے انتظامیہ کو الرٹ رہنے کی سخت ہدایات جاری کی ہے انہوں نے انتظامیہ پر زور دیتے ہوئے کہاہے کہ خبردار اگر کسی بھی افغانی باشندے کی دل آزاری کی گئی اور اگر کوئی ناخوشگوار واقعی پیش آیا تو اسی وقت تمام ذمہ واران کیخلاف سخت قانونی کارروائی عمل میں لائی جائے گی ڈی سی چمن راجہ اظہر عباس نے انتظامیہ کو اس سلسلے میں احکامات جاری کرتے ہوئے کہا کہ یہاں پر مقیم اپنے ملک جانے والے افغان مہاجرین ہمارے بھائی ہیں انکی دل ازاری اور اذیت پہنچانے والوں کوایسی سخت اور کڑی سزا دی جائے گی کہ ان سے لوگ عبرت حاصل کریں گے انہوں نے کہا کہ ضلعی انتظامیہ چمن نے چمن بائی پاس پر غیر قانونی افغان مہاجرین کیلئے ہولڈنگ کیمپ میں تمام سہولیات فراہم کر دیئے گئے ہیں مہاجرین کو کیمپ میں کی کھانے پینے بستروں اور دیگر تمام ضروری سہولیات فراہم کیے جا رہےہیں انہوں نے کہا کہ اگرچہ غیر تارکین وطن کو بائی فورس پاکستان سے بیدخل کیے جانا ایک ناپسندیدہ عمل اور بہت مشکل فیصلہ اور ایک کڑوا گھونٹ ہے لیکن پاکستان کو دہشتگردی تخریب کاری اقتصادی معاشی صحت تعلیم اور امن و امان کے گوناگوں مسائل کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے جس کی وجہ سے پاکستان کو مجبورا اور نہ چاہتے ہوئے اور دل پر پتھر رکھ کر اپنے افغان بھائیوں اور مہمانوں کو واپس ان کے اپنے ملک افغانستان بھیجنا پڑ رہا ہے جس سے اگر کسی بھی افغانی کی دل آزاری ہو تو ہم پہلے ہی معذرت چاہتے ہیں افغانیوں کو ہم نے گزشتہ 45 سالوں سے اپنے ہاں ہر طرح اور ہر قسم کی کاروبار کے لیے ازاد چھوڑا اور انھیں ہر قسم کی معاونت اور سہولیات فراہم کی جس کی وجہ سے پاکستان کو امن و امان معاشی صحت اور تعلیم غرضیکہ زندگی کے ہر شعبے پر منفی اثرات مرتب ہوئے لیکن اب افغانستان میں طالبان حکومت کے آنے کے بعد وہاں حالات نارمل صورت اختیار کر گئے ہیں انہوں نے کہا کہ اب افغانیوں کو واپس اپنے ملک جاکر وہاں کی ترقی و خوشحالی کیلئے اپنا کردار ادا کریں اور اپنے ملک کی آباد کاری اور اقتصادی و معاشی ترقی میں یہاں سے بھیجے جانے والے افغان مہاجرین کردار ادا کر کے اپنے آئندہ نسلوں کے لیے ایک خوشحال اور ترقی یافتہ ملک بنانے میں اپنا بھرپور خدمات سر انجام دیں آخر کب تک افغانی مہاجرین کی زندگی بسر کرتے رہیں گے ایک نہ ایک دن تو انکو واپس اپنے ملک جانا پڑے گا ڈی سی نے کہا کہ تمام متعلقہ ادارے ہولڈنگ سینٹرز کو سہولیات فراہم کرنے میں بھرپور معاونت کر رہے ہیں ہولڈنگ سینٹر سے تارکین کو وطن واپس بھجوایا جا رہا ہے ڈی سی چمن نے کہا کہ ہماری دعائیں ہمدردیاں ہمیشہ اپنے افغان بھائیوں کے ساتھ ہیں انہوں نے کہا کہ ہم دعا کرتے ہیں کہ اللہ پاک افغانیوں کو اپنے ملک میں ہر قسم کی عزت اور ترقی اور خوشحالی سے سرفراز فرمائے اور انہیں امن و امان سے اپنے ملک میں قیام کرنا نصیب کریں۔

 

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.