Mashriq Newspaper

انڈونیشیا میں دنیا کا قدیم ترین اہرام دریافت

ماہرین آثار قدیمہ نے انڈونیشیا میں دنیا کا قدیم ترین پتھر سے تعمیر کیا گیا اہرام دریافت کیا ہے، اسکی نئی کاربن ڈیٹنگ (قدامت کا اندازہ لگانے کا سائنسی طریقہ) کے مطابق گننگ پاڈانگ 10 ہزار سال قبل بنایا گیا تھا۔ 

اس طرح یہ انگلستان میں موجود اسٹون ہینگ اور فراعین مصر کے اہرام سے تین گنا زیادہ قدیم ہے۔

بتایا جاتا ہے کہ یہ انڈونیشیا کے جزیرہ مغربی جاوا کے ایک لاوا والے پہاڑ کے اندر ایک 98 فٹ گہرے بہت بڑے پتھر پر بنایا گیا ہے۔

گننگ پاڈانگ کو سب سے  پہلے 1890 میں ڈچ ماہرین آثار قدیمہ نے دوبارہ تلاش کیا تھا، یہ دراصل انسان کے ہاتھوں سے تعمیر ہونے والا قدیم ترین آثار قدیمہ سمجھا جاتا ہے۔

یہ پہلے تعمیر ہونے والا اہرام ہے جس میں کئی اوپر چڑھنے اترنے کی سیڑھیاں موجود ہیں جو کہ آتش فشاں چٹانوں کے اندر بنائی گئی ہے۔

کچھ ماہرین کا اندازہ ہے کہ اسے آخری برفانی دور میں لگ بھگ 16 ہزار برس قبل بنایا گیا ہے۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.