Mashriq Newspaper

رات کے اندھیرے میں تارے میں دھماکے کی خبر کی باز گشت

تاروں کی دنیا کے حوالے سے ایک دلچسپ خبر نے سوشل میڈیا صارفین کی توجہ حاصل کر لی ہے، جس میں بتایا جا رہا ہے کہ رات کے اندھیرے میں تارے میں دھماکا ہونے جا رہا ہے ۔

ذرائع کے مطابق متوقع دھماکے کے باعث آسمان پر روشنی ہوگی، جسے زمین سے بھی دیکھا جا سکے گا۔

ماہرین فلکیات کے مطابق نووا نامی ستارہ رات کے اندھیرے میں شمالی کراؤن میں پھٹے گا، جس کے باعث رنگین روشنی پیدا ہوگی جو کہ زمین پر موجود انسان بھی دیکھ سکیں گے، تاہم یہ روشنی کہاں کہاں دیکھی جا سکے گی اس حوالے سے نہیں بتایا گیا ہے۔

ناسا کے گاڈ ڈارڈ اسپیس فلائٹ سینٹر سے تعلق رکھنے والی ریبیکا ہاؤنسیل کا کہنا تھا کہ یہ زندگی میں ایک بار ہونے والا واقعہ ہے، مجھے یقین ہے کہ اس سے کئی دیگر اسٹرونامرز بھی سامنے آئیں گے۔

ستاروں میں ہونے والے دھماکوں کو ’ٹی کرونے بوریلس‘ کہا جاتا ہے جو کہ زمین سے 3 ہزار لائٹ ائیرز کی دوری پر واقع ہے جو کہ سفید مداروں میں سرخ روشنی کی طرح ہوتا ہےاس سرخ روشنی میں ہائیڈروجن موجود ہوتا ہے جو باہرکی طرف نکلتا ہے، جس کے باعث تھرمو نیوکلئیر دھماکا ہوتا ہے۔

واضح رہے آخری مرتبہ ستاروں میں دھماکا 1946 میں ہوا تھا جبکہ دھماکے سے ایک سال قبل خلا میں غیر معمولی حرکت بھی دیکھی گئی تھی۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.