Mashriq Newspaper

نواب محمد اسلم رئیسانی وزیراعلیٰ بنے تو جعلی بدامنی مسلط کی گئی ،نوابزادہ لشکری رئیسانی

آج ہمارے ملک پاکستان میں بھی حکمران پاکستانی رہے ہیں پر ڈیڑھ سوارب روپے کیوں قرض دار ہے
کوئٹہ(یو این اے )نوابزادہ حاجی لشکری رئیسانی نے کہا کہ اگر شفاف اور غیر جانبدارانہ انتخابات ہوئے جو بھی آئندہ کا وزیر اعلی ہوگا نئے وزیر اعلی سے بلوچستان کے عوام کے مسائل حل کرنے کی توقع ہے پاکستان میں دو مرتبہ شفاف انتخابات ہوئے ایک دفعہ جنرل یحیی خان نے جب الیکشن کرائے دوسری مرتبہ جب محترمہ بینظیر بھٹو شہید ہوئی اسٹیبلشمنٹ پسپا ہوا جس کے نتیجہ میں نواب محمد اسلم خان رئیسانی وزیر اعلی منتخب ہوئے کچھ عرصہ کام ہو الیکن ہمارے صوبہ پر جعلی بد امنی مسلط کی گئی جس پر کیپسٹی بلڈنگ بھی نہ ہوسکی انہوں نے کہا اس کے بعد پسپاہ سٹیبلشمنٹ نے جب ہوش سنبھالا تو ہمارے صوبہ بلوچستان کا برا حال ہوا آج بھی لگتا ہے انجینئر ڈ سوکالڈ پولیٹکل پروسس اس ملک میں جارہا ہے جس کے نتیجہ میں بلوچستان کے تمام معاملات ٹھیک نہیں ہوں گے آج ہمارے ملک پاکستان میں بھی حکمران پاکستانی رہے ہیں پر ڈیڑھ سوارب روپے کیوں قرض دار ہے کیونکہ بلوچستان میں1971میں صوبہ بنا اس سے پہلے کمیشنیٹ کے تحت ہمارے صوبہ کو چلا یا جارہا تھا کیونکہ ہمارے ملک میں ایسے لوگوں کو مسلط کیا جاتا ہے جو عوام کو جوابدہ نہیں وہ کسی اور کو جوابدہ ہے بلوچستان میں بہت عرصہ سے ترقیاتی کام روکے ہوئے ہیں ۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.