Mashriq Newspaper

میانمار: جھڑپوں کے سبب 50 ہزار افراد نقل مکانی پر مجبور

اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ شمالی میانمار میں مسلح گروہوں کے اتحاد کی طرف سے 2 ہفتے قبل فوج کے خلاف حملے شروع کرنے کے بعد سے تقریباً 50 ہزار افراد بے گھر ہوگئے ہیں۔

ڈان اخبار میں شائع غیر ملکی خبر رساں ادارے ’اے ایف پی‘  کے مطابق چینی سرحد کے قریب واقع شمالی شان کے پورے علاقے میں جھڑپیں جاری ہیں، مبصرین جنتا کے 2021 سے اقتدار سنبھالنے کے بعد سے یہ ان کے لیے سب سے بڑا چیلنج قرار دے رہے ہیں۔

میانمار نیشنل ڈیموکریٹک الائنس، تانگ نیشنل لیبریشن آرمی اور اراکان آرمی نے چین کے لیے اہم تجارتی راستوں کو بند کر دیا اور بتایا کہ انہوں نے درجنوں فوجی چوکیوں پر قبضہ کر لیا ہے۔

اقوام متحدہ کے رابطہ دفتر برائے انسانی امور (یو این او سی ایچ اے) کے مطابق 9 مئی سے اب تک شمالی شان کے علاقے سے تقریبا 50ہزار افراد نقل مکانی کرنے پر مجبور ہوگئے ہیں، ایک رہائشی نے کہا کہ چین کے اہم تجارتی راستے میوز اور چنشواہو پر قائم ہنسوی قصبے میں جمعہ کو بھی جھڑپیں جاری رہیں۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.