Mashriq Newspaper

کوئٹہ میں آٹا 140 روپے کلو فروخت ہونے لگا

کوئٹہ ( ایریا رپورٹر) کوئٹہ میں مرحلہ وار آٹا کی قیمت14000روپے تک پہنچ گیا اس وقت کوئٹہ شہر میں آٹا کا فی کلو قیمت 116روپے سے بڑھ کر 140روپے بڑھ گیا ، آٹے کی بڑھتی رجحان کے باعث نان بائیوں نے بھی سر اٹھا لیا گزشتہ چار دنوں سے ہڑتال پر ہے کہ حکومت روٹی کی قیمت میں اضافہ کرے ، اوپر سے حکومت نے آٹا مزید مہنگا کردیا اس طرح گھمیر صورتحال نے عوام کو ذہنی مریض بنا دیا ہے ، کوئٹہ کے شہری کہتے ہیں کہ نان بائیان صرف غریب عوام اور حکومت پربلیک میلنگ کیلئے ہڑتال کر رہی ہے جب کوئٹہ شہر میں آٹا فی بوری 100کلو 14800روپے میں فروخت ہو رہا تھا تو نان بائیان 20روپے میں روٹی فروخت کررہے تھے جس کے بعد حکومت نے 5روپے ریٹ بڑھایا اسی طرح مرحلہ وار 30روپے تک حکومت نے پہنچایا کوئٹہ میں آٹا کی قیمت اوپر نیچے ہو رہی ہے لیکن 15000ہزار روپے تک ٹچ نہیں ہوا ہے تندور مالکان نے پھر سے سر اٹھا لیا کہ قیمت بڑھا دیں ، کوئٹہ کے شہریوں نے حکومت وقت سے اپیل کیا ہے کہ نان بائیوں کے بلیک میلنگ میں نہ آتے ہوئے قیمت کم کیا جائے یہ قیمت غریب اور مسافر عوام پر بوجھ ہے جو دیگر اضلاع سے یہاں مسافر ہیں اور ر ہ رہے ہیں لیکن ان لوگوں کو کوئی احساس نہیں آئے روز جب آٹا 11000روپے تک پہنچا توانہوںنے کوئی قیمت کم نہیں کیا ہے جبکہ آٹا اب توڑا مہنگا ہوا تو انہوںنے پھر سے ہڑتال کیا ہے جو قابل قبول نہیں ، انہوںنے حکومت وقت سے فوری طورپر آٹے کی قیمتوں کو کم کرنے کا مطالبہ کیا ہے ۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.