Mashriq Newspaper

نیپال نے ٹِک ٹاک پر پابندی عائد کردی

 نیپال کی حکومت نے چین کے سوشل میڈیا پلیٹ فارم ٹک ٹاک پر فوری طور پر پابندی عائد کردی ہے۔

عالمی میڈیا رپورٹس کے مطابق نوجوان نسل میں غلط رجحان پیدا کرنے اور ان پر منفی طور پر اثرانداز ہونے کی وجہ سے نیپال کی حکومت نے ٹک ٹاک پر پابندی اور اسی طرح کے دوسرے پلیٹ فارمز پر قانون سازی کا فیصلہ کیا ہے۔

نیپال کے وزیر برائے مواصلات اور حکومتی ترجمان ریکھا شرما نے کہا کہ کابینہ کے اجلاس میں ٹِک ٹاک پر فوری طور پر پابندی لگانے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔

ٹک ٹاک پر پابندی تمام سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کی قانون سازی کے حوالے سے حکومتی اعلان کے پانچ دن بعد سامنے آئی ہے جبکہ اسی کے ساتھ نیپال میں قائم سوشل میڈیا پلیٹ فارمز کے دفاتر کو حکومتی شکایات دور کرنے کیلئے تین ماہ کی مہلت دی گئی ہے۔

حکومتی ترجمان نے بتایا کہ ایکس اور فیس بک سمیت دیگر پلیٹ فارمز سے متعلق فیصلے زیر التوا ہیں۔ سوشل میڈیا صارفین کے لیے حکومتی ہدایات میں جعلی شناخت کے استعمال اور ہتک آمیز سرگرمیوں میں ملوث ہونے پر پابندی ہے۔ پلیٹ فارمز کو یہ بھی ہدایات دی گئی ہیں کہ وہ صارف کی اصل شناخت ظاہر کریں اور کسی بھی شکایت کی صورت میں تحقیقات میں تعاون کریں۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.