Mashriq Newspaper

بلوچستان کی خوشحالی کی طرف ایک شاندار قدم

بلوچستان میں سبی اور ہرنائی اضلاع کے درمیان تاریخی ریلوے سیکشن اگست 2006 میں دہشتگردی کی وجہ سے بند کر دیا گیا تھا۔

ٹرین بند ہونے سے جہاں مقامی لوگوں کو سماجی، معاشی اور دیگر مسائل کا سامنا تھا وہیں مذ- ہبی اجتماعات اور ثقافتی تہواروں کے انعقاد میں بھی مشکلات کا سامنا تھا۔

ہرنائی کے مقامی لوگوں کو سبی پہنچنے کے لیے 6 اضلاع سے گزرنا پڑا جو کہ مہنگا اور وقت طلب تھا۔

ٹرین کی پٹڑی بند ہونے سے ہرنائی سے پاکستان کے دوسرے شہروں تک ٹرین کے ذریعے کوئلے کی ترسیل رک گئی۔

سبی اور دیگر ملحقہ علاقوں میں ہرنائی سے تازہ زرعی مصنوعات ضائع ہوگئیں۔

پاک فوج اور ایف سی بلوچستان (نارتھ) نے سبی، سانگان، ہرنائی اور ملحقہ علاقوں میں دہشتگردوں کے خلاف آپریشن کرکے ان علاقوں میں امن قائم کیا۔

سبی-ہرنائی ریلوے ٹریک کی بحالی کے لیے وقتاً فوقتاً کوششیں کی جاتی رہی ہیں، لیکن تعمیر نے 2023 میں حقیقی رفتار حاصل کی۔

پاک فوج اور ایف سی بلوچستان نے ریلوے انجینئرز اور این ایل سی کے عملے کی سیکیورٹی کے فرائض سنبھالے اور اس طرح ٹریک کی بحالی کا یہ کام مختصر وقت میں مکمل ہوگیا۔

سبی اور ہرنائی کے لوگوں نے ٹرین کی بحالی کو خطے کی خوشحالی، معاشی ترقی اور آرام دہ سفری سہولیات کی جانب ایک مثبت قدم قرار دیا۔

سبی-ہرنائی ریلوے سیکشن کی بحالی سے یہاں کوئلے اور دیگر زرعی اجناس کی ترسیل شروع ہو گئی ہے جس سے ان علاقوں کی معاشی خوشحالی اور سماجی ترقی میں مزید تیزی آئے گی۔

سبی تا ہرنائی ٹرین پاکستان آرمی اور ایف سی بلوچستان (نارتھ) کی حفاظت میں چلائی جا رہی ہے اور لوگوں کو آرام دہ، سستا اور محفوظ سفر فراہم کر رہی ہے۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.