Mashriq Newspaper

قومی اسمبلی اجلاس: طارق بشیر نے زرتاج گل کو نازیبا الفاظ کہنے پر معافی مانگ لی

قومی اسمبلی اجلاس میں حکومتی رکن طارق بشیر چیمہ اور اپوزیشن رکن زرتاج گل میں تلخ کلامی ہوئی، زرتاج گل نے گالی دینے کا الزام عائد کیا جس کے بعد ایوان میں ہنگامہ ہوگیا اپوزیشن نے طارق بشیر کی رکنیت معطل کرنے کا مطالبہ کردیا جس پر اسپیکر نے آمادگی ظاہر کردی۔

قومی اسمبلی کا اجلاس اسپیکر ایاز صادق کی  زیر صدارت منعقد ہوا۔ قومی اسمبلی اجلاس میں طارق بشیر چیمہ نے صدارتی خطاب پر اظہارِ خیال کرتے ہوئے کہا کہ صدارتی خطاب پر غیر متعلقہ باتیں کی گئیں، سب سے پہلے گندم کے مسئلے پر بات کرنا چاہتا ہوں، آج کاشت کار کے ساتھ جو زیادتی ہو رہی ہے تاریخ میں کبھی نہیں ہوئی۔

طارق بشیر چیمہ کی تقریر کے دوران اقبال آفریدی نے انہیں ٹوک دیا اس پر چیمہ نے کہا کہ آپ خاموش ہوجائیں نہیں تو میں بیٹھ جاؤں گا۔ انہوں نے کہا کہ ہوش کے ناخن لیں اور گندم کی فوری خریداری کریں، گندم کی درآمد کے لیے صوبے اپنی ڈیمانڈ بھیجتے ہیں، درآمد کے بعد گندم فوری طور پر متعلقہ صوبوں کو سفارش شدہ مقدار میں فراہم کی جاتی ہے، گندم درآمد کیوں کی گئی ہمیں نہیں معلوم۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.