Mashriq Newspaper

پاک ایران کشیدگی: ایرانی فضائی حدود ترک، 50 پروازیں متاثر

پاکستان کی جانب سے ایران کی فضائی حدود کا استعمال ترک کرنے کے بعد ابتدائی 24 گھنٹوں کے دوران 50 پاکستانی پروازیں متاثر ہوئی ہیں۔

ایوی ایشن ذرائع کے مطابق پی آئی اے کی کویت سٹی سے سیالکوٹ اور لاہور آنے والی پروازوں کا دورانیہ بڑھ گیا ہے۔

افغانستان کی فضائی حدود پہلے ہی بند ہونے سے کراچی سے ٹورنٹو کی پی آئی اے کی پرواز سب سے زیادہ متاثر ہورہی ہے۔ کراچی سے ٹورنٹو آنے جانے کی پروازیں پی کے 783 اور 784 طویل دورانیے لگ بھگ پونے 2 گھنٹے تک ایران کی فضائی حدود استعمال کرتی رہی ہیں اور اب ان کا مجموعی دورانیہ ایک گھنٹہ زیادہ ہوجائے گا۔

بندش کے ابتدائی 24 گھنٹوں میں پی آئی اے کی 40 پروازیں متاثر ہوئیں ہیں۔ پی آئی اے کی جدہ سے لاہور آنے والی پرواز پی کے 736 نے 39 ہزار فٹ اور لاہور سے ریاض کے لیے پرواز پی کے 725 نے 36 ہزار فٹ کی بلندی سے آخری مرتبہ 18 جنوری کو دن 11 بجے کے آس پاس ایرانی فضائی حدود استعمال کی۔ اب یہ پروازیں تربت اور گوادر سے ہوتے ہوئے گلف عمان کی فضائی حدود میں داخل ہورہی ہیں۔

اسلام آباد، لاہور، سیالکوٹ، پشاور اور ملتان سے جدہ، ریاض، مدینہ، شارجہ، دبئی، ابوظہبی، دمام اور کویت سٹی کی پروازیں ایرانی حدود استعمال کرتی رہی ہیں۔

لاہوراور سیالکوٹ سے کویت سٹی کے لیے پروازوں کو ڈیڑھ گھنٹے سے زائد ایران کی فضائی حدود استعمال کرتی رہی ہیں۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.