Mashriq Newspaper

کیا اسرائیل کے نزدیک تمام فلسطینیوں کو قتل یا بیدخل کردینا ہی واحد حل ہے، یورپی یونین

یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ نے فلسطین کے دو ریاستی حل پر اصرار کرتے ہوئے اسرائیل کو خبردار کیا ہے کہ غزہ میں فوج اور طاقت کے استعمال سے معاملہ حل نہیں کیا جا سکتا۔

عالمی خبر رساں ادارے کے مطابق یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ جوزف بوریل نے اسرائیلی وزیر اعظم بنجمن نیتن یاہو کے آزاد فلسطینی ریاست کے مطالبے کو مسترد کرنے کی مذمت کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسرائیل سے فلسطین کے تنازع کو 2 ریاستوں کے قیام کے ذریعے حل کروانے  کے لیے دوٹوک بات چیت وقت آگیا ہے۔

جوزف بوریل نے دو ریاستی حل پر زور دیتے ہوئے مزید کہا کہ اگر نیتن یاہو کے نزدیک یہ حل نہیں تو پھر ان کے ذہن میں دوسرا کون سا حل ہے؟ کیا تمام فلسطینیوں کو وہاں سے نکال دینا یا ان کو ماردینا ہی اسرائیل کے نزدیک حل ہے۔

یورپی یونین کی خارجہ پالیسی کے سربراہ جوزف بوریل نے یہ بھی کہا کہ یونین کے وزراء نے ایک “جامع نقطہ نظر” کے ساتھ فلسطین میں پائیدار امن کے قیام کے لیے حکمت عملی تلاش کرنے کی کوشش کی ہے۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.