Mashriq Newspaper

اسٹیبلشمنٹ کا لاڈلا صرف پاکستان ہے، جہانگیر ترین

 استحکام پاکستان پارٹی کے سربراہ جہانگیر ترین نے کہا ہے کہ ن لیگ اور آئی پی پی نہیں بلکہ اسٹیبلشمنٹ کا لاڈلہ صرف پاکستان ہے۔

کامونکی جلسے میں خطاب سے قبل ایک صحافی نے جہانگیر ترین سے مختصر گفتگو کی اور سوال کیا کہ ’آپ اسٹیبشلمنٹ کے زیادہ لاڈلے ہیں یا ن لیگ‘۔ اس پر جہانگیر ترین نے جواب دیا کہ اسٹیبلشمنٹ کا لاڈلا صرف پاکستان ہے۔

جہانگیر ترین نے رپورٹر کو یہ بھی کہا کہ پہلے آپ جلسے میں عوام سے مخاطب ہونے دیں باقی باتیں آپ کے سامنے خود ہی آجائیں گی۔

بعد ازاں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے جہانگیر ترین نے کہا کہ سب ملکر ملک کو سنبھالیں گے تو ہی پاکستان کی قسمت بدلے گی، ہم حکومت میں آکر ایسے سرکاری اسپتال بنائیں گے کہ لوگ باہر سے معیار دیکھنے آئیں گے اور پاکستان کو دنیا بھر میں مثالی زرعی ملک بنائیں گے۔

استحکام پاکستان پارٹی کے بانی کا کہنا تھا کہ ’ہم نے ماضی سے بہت کچھ سیکھا مگر اب آگے بڑھنے کا وقت ہے، تمام بچوں کو یکساں معیار تعلیم لنا چاہیے، ہم اب بہترین پاکستان بنائیں گے۔

عثمان بزدار اور محمود خان کرپٹ ترین وزرائے اعلیٰ تھے، صدر  استحکام پاکستان پارٹی

دریں اثنا کامونکی میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے استحکام پاکستان پارٹی کے صدر عبدالعلیم خان نے کہا کہ ہم نے نیا پاکستان بنانے کیلیے 10 سال تک رات دن محنت کی اور جب وہ صاحب وزیر اعظم بنے تو پنجاب میں بزدار کو لے آئے اور خیبرپختونخوا میں گورا بزدار وزیراعلیٰ بنایا۔

انہوں نے کہا کہ دونوں صوبوں کے وزرائے اعلیٰ (عثمان بزدار، محمود خان) نالائق اور کرپٹ ترین تھے۔ پنجاب میں عثمان بزدار نے بنی گالہ کی سپورٹ سے کرپشن کا جمعہ بازار لگایا اور بیڈ گورننس کی جس سے لوگوں کے دل ٹوٹ گئے۔ پی ٹی آئی دور میں لاہور کے سرکاری اسپتالوں میں ایک بیڈ پر چار چار بچے ہوتے تھے جبکہ مائیں اپنے بچوں کو باہر گودوں میں لے کر بیٹھتی تھیں۔

علیم خان نے کہا کہ چور اور لٹیرے حکمران ہمارے ملک کو لوٹ کر کھا گئے، سندھ کا حال یہ ہے کہ وہاں ایک ہی ندی سے کتے اور انسان کے بچے پانی پیتے ہیں، جن کو ہم نے ایماندار سمجھا اُن کے کرتوت عوام کے سامنے ہیں۔

استحکام پاکستان پارٹی کے صدر نے کہا کہ فوج نے پی ٹی آئی کو مکمل سپورٹ دی اور آج یہ اُن پر ہی تنقید کررہے ہیں اور فوج کے خلاف باتیں کررہے ہیں جبکہ ہمارے فوجی سرحدوں پر قربانیاں دے رہے ہیں، آج ہمارا ملک فوج کی وجہ سے ہی مضبوط ہے کیونکہ فوج ہے تو پاکستان ہے۔

علی خان نے کہا کہ اگر ہمیں حکومت میں آنے کا موقع ملا تو امیروں کیلیے بجلی کی قیمت دگنی کر کے غریب کو 300 یونٹ تک مفت بجلی دیں گے، کسانوں کو ٹیوب ویل کے لیے فری بجلی ملے گی، موٹرسائیکل والوں کو آدھی قیمت پر پیٹرول ملے گا جبکہ نوجوانوں کو بلاسود قرض دیں گے۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.