Mashriq Newspaper

صدارتی الیکشن میں ووٹ نہیں ڈالیں گے، فضل الرحمان

جمعیت علماء اسلام (ف) مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ الیکشن سے پہلے اطلاع تھی کہ فیصلہ ہوگیا ہے، جے یو آئی کا حجم کم کیا جائے گا، اصولی فیصلہ کیا کہ صدر کے انتخاب میں ووٹ نہیں ڈالیں گے۔

پشاور میں پریس کانفرنس کے دوران مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ ہم نے الیکشن لڑنے میں اپنی داڑھی سفید کی ہے مگر ایسے الیکشن نہیں دیکھے۔

انہوں نے کہا کہ اس الیکشن میں وہ لوگ جیتے ہیں جو کہیں نظر نہیں آرہے تھے، ہماری پوزیشن واضح ہے ہم کسی حکومت میں شامل نہیں ہونا چاہتے۔

جے یو آئی سربراہ نے مزید کہا کہ اسٹیبلشمنٹ چاہتی ہے اسمبلیاں بھی ان کے مطابق ہوں اور لوگ بھی، الیکشن سے پہلے اطلاع تھی کہ فیصلہ ہوگیا ہے جمعیت کا حجم کم کیا جائے۔

اُن کا کہنا تھا کہ 2018 میں بھی کہتے تھے دھاندلی ہوئی آج بھی کہہ رہے ہیں دھاندلی ہوئی، الیکشن مہم میں عوام کو پتا چل جاتا ہے کون جیت رہا اور کون ہار رہا ہے۔

فضل الرحمان نے یہ بھی کہا کہ آنے والے دنوں میں بتاؤں گا سسٹم کے اندر رہنے والے روئیں گے، ان سے ملک نہیں چلے گا، نظام گر جائے گا۔

جے یو آئی سربراہ نے کہا کہ ساری زندگی الیکشن لڑے ہیں داڑھی الیکشن میں سفید ہوئی ہے ، اگر ان کی مداخلت ہے تو آئندہ الیکشن کا بھی کوئی فائدہ نہیں ہوگا۔

انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی وفد آیا ہم نے روایات کے مطابق انہیں عزت دی، اگر پی ٹی آئی جیتی ہے تو ان کو حکومت دیں، ہمارا پارلیمانی نظام جاری رہے گا۔

مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ اپنی کامیابی کا اندازہ ہے، پوچھتا ہوں ہم سے تکلیف کس کو ہے؟ عالمی قوتوں کیخلاف آواز اٹھاتے ہیں تو وہ بھی کہتے ہیں کہ ہمارے حجم کو کم ہونا چاہیے۔

ان کا کہنا تھا کہ اگر یہ سمجھتے ہیں کہ دھاندلی نہیں کی تو پھر 9 مئی کا بیانیہ دفن ہوگیا، آئی ایف ایم کا رویہ ہمارے ساتھ بہتر نہیں ہے، باہر کے اداروں کو مداخلت کی دعوت نہیں دینی چاہیے۔

جے یو آئی سربراہ نے کہا کہ ہماری پوزیشن واضح ہے ہم کسی حکومت میں شامل نہیں ہونا چاہتے، اصولی فیصلہ کیا کہ صدر کے انتخاب میں ووٹ نہیں ڈالیں گے۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.