Mashriq Newspaper

بلوچستان میں تحریک انصاف کے آزاد امیدواروں کے الیکشن چوری ہوئے: مرکزی قائدین

حریک انصاف کے مرکزی قائدین نے بلوچستان کے قومی اسمبلی کے امیدواروں کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ بلوچستان میں تحریک انصاف کے آزاد امیدواروں کے الیکشن چوری ہوئے۔

شاندانہ گلزار نے کہا کہ ہم بتائیں گے کس طرح بلوچستان میں ہمارا الیکشن چوری ہوا، ہمارے امیدوار تمام شواہد ساتھ لے کر آئے ہیں۔

شیر افضل مروت نے کہا کہ ملک بھر میں تحریک انصاف کے مینڈیٹ پر ڈاکہ ڈالا گیا ہے، الیکشن کمیشن کا رویہ دوسری جماعتوں کی نسبت یکسر مختلف ہے، ہمارے امیدواروں کے حتمی نتائج آنے کے بعد دوسرے امیدواروں کو جتوایا گیا۔

این اے 263 کے امیدوار سالار خان کاکڑ نے کہا کہ بلوچستان میں میڈیا کوریج نہ ہونے کے برابر ہے، اسی وجہ سے آج ہم سب اسلام آباد آئے ہیں، ہمیں امید ہے میڈیا کے توسط سے ملک اور ملک سے باہر آواز پہنچے گی، پہلے بھی دھاندلی ہوتی تھی لیکن اس بار ٹھیکیداروں اور قبضہ مافیا کو جتوایا گیا۔

سالار خان کاکڑ نے مزید کہا کہ اس بار 20 کروڑ سے ایک ارب تک سیٹوں کے سودے کئے گئے، میرے حلقے میں آٹھویں نمبر والے امیدوار کو اٹھا کر جتوا دیا گیا۔
علی محمد خان نے کہا کہ الیکشن میں قوم کے حق پر ڈاکہ ڈالا گیا ہے، غریب آدمی کے پاس اس ملک میں آخری اختیار ووٹ ہے، اگر یہ اختیار بھی غریب سے چھین لیں تو یہ طریقہ تو 1947ء سے پہلے بھی تھا، یہی ہماری جدوجہد تھی کہ لندن پلان کا حصہ نہیں بنیں گے۔

انہوں نےمزید کہا کہ الیکشن پر اربوں روپے لگا کر کیوں ڈرامہ رچایا گیا، میں مریم نواز کو مبارکباد ضرور دیتا لیکن پہلے مریم صاحبہ اپنی سیٹ تو جیت جاتیں، پاکستان کو بچانا ہے تو جس کا میڈینٹ ہے اس کو دیا جائے، تمام سختیوں کے باوجود عوام نے نکل کر جمہوریت کو ووٹ دیا۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.