Mashriq Newspaper

ڈالر کے ریٹ دوبارہ 281 روپے سے نیچے آگئے

مانیٹری پالیسی مستحکم رکھے جانے کے  نتیجے میں منگل کو بھی زرمبادلہ کی دونوں مارکیٹوں میں ڈالر کی نسبت روپیہ تگڑا رہا اور ڈالر کے ریٹ 281  روپے سے نیچے آگئے۔

مانیٹری پالیسی میں شرح سود بغیر کسی تبدیلی کے مستحکم رکھے جانے اور انتظامی اقدامات برقرار رکھنے کی بدولت منگل کو بھی زرمبادلہ کی دونوں مارکیٹوں میں ڈالر کی نسبت روپیہ تگڑا رہا جس سے ڈالر کے اوپن ریٹ دوبارہ 281روپے سے نیچے آگئے۔

ایکس چینج کمپنیوں کی جانب سے ماہوار 30 سے 35کروڑ ڈالر انٹربینک مارکیٹ میں سرینڈر کیے جانے اور آئندہ ایک سے ڈیڑھ ماہ میں ڈالر کی قدر گھٹ کر 270روپے کی نچلی سطح پر آنے کی پیشگوئیاں روپے کے استحکام کا باعث بن رہی ہے۔

معیشت میں زرمبادلہ کی ڈیمانڈ سپلائی کے مقابلے میں کم ہونے جیسے عوامل کے باعث انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قدر میں اتارچڑھاؤ کا رحجان رہا تاہم مارکیٹ میں طلب کی نسبت رسد میں اضافے سے کاروبار کے اختتام پر انٹربینک مارکیٹ میں ڈالر کی قدر 10پیسے کی کمی سے 279 روپے 54پیسے کی سطح پر بند  ہوئی، اسی طرح  اوپن کرنسی مارکیٹ میں بھی ڈیمانڈ میں کمی سے ڈالر کی قدر 23پیسے کی کمی سے 280روپے 86پیسے کی سطح پر بند ہوئی۔

You might also like
Leave A Reply

Your email address will not be published.